13

کیا وزیر مملکت داخلہ قیدیوں سے براہ راست تفتیش کرسکتے ہیں؟

اسلام آباد(فری ہینڈ نیوز)وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کے راولپنڈی کے تھانوں پر چھاپے کی ویڈیو سامنے آگئی۔ویڈیو کے سامنے آتے ہی نیا قانونی سوال یہ کھڑا ہوگیا ہے کہ کیا وزیر مملکت برائے داخلہ حوالات کھلوا کرقیدیوں سے براہ راست تفتیش کرسکتے ہیں؟شہریار آفریدی کے راولپنڈی کے تھانوں پر چھاپوں سے نیا تنازع کھڑا ہوگیا ہے ،انہوں نے حوالات کھلوا کر قیدیوں سے براہ راست تفتیش کی اور موقع پر ہی ایک ایس ایچ او اور 2پولیس اہلکار وں کو معطل کرنے کے احکامات بھی دے دئیے۔تھانوں پر چھاپے کے دوران وزیر مملکت برائے داخلہ نے راولپنڈی کے تھانوں کے 3ایس ایچ اوز کو اپنا دفتر بلوالیا ،تینوں ایس ایچ او وزیر مملکت کے بجائے سی پی او راولپنڈی کے پاس پہنچ گئے۔بعدازاں سی پی او راولپنڈی خود وزیر مملکت داخلہ کے دفتر گئے اور دو گھنٹے طویل ملاقات کی ،ان کے ہمراہ تینوں تھانوں کے ایس ایچ اوز بھی وزارت داخلہ گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں