13

چیئرمین سینیٹ نے فواد چوہدری اور مشاہداللہ خان میں صلح کرادی

اسلام آباد(فری ہینڈ نیوز)چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے مداخلت کرکے وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری اور ن لیگی سینیٹر مشاہداللہ خان کے درمیان صلح کرادی۔سینیٹ اجلاس میں وزیر اطلاعات جواب دینے اٹھے تو مشاہد اللہ خان نے کہا کہ فواد چوہدری مجھ سے معافی مانگیں جس پر وفاقی وزیر نے جواباً کہا کہ میں کس بات کی معذرت کروں؟انہوں نے مزید کہا کہ مشاہد اللہ خان نے سارا خاندان پی آئی اے میں بھرتی کرکے ادارے کا بیڑا غرق کر دیا،ن لیگی سینیٹر نے اپنے علاج پر سرکار کے 54 ہزار پاؤنڈ لگوا دئیے، ان کی انکوائری ایف آئی اے میں چل رہی ہے ، وہاں سے خود کو کلیئر کروا کے آئیں۔مشاہد اللہ خان نے کہا کہ یہ منحوس ہے ، فراڈ آدمی ہے، میرا بھائی ہیتھرو ائیرپورٹ پر ہے ، کل سے میرے بھائی کے خلاف بھی انتقامی کارروائی شروع ہوئی ہے ، میرے بھائی کو لیٹر دیا گیا ہے کہ فوراً پاکستان چلے جائیں، سینیٹر رضا ربانی نے کہا کہ 26سال میں ایسا ماحول سینیٹ میں نہیں دیکھا، جس میں پگڑی اچھالی گئی ہو، ایسا دانستہ طور پر کیا جا رہا ہے تاکہ ایوان میں افرا تفری پیدا ہو اور اپوزیشن مشتعل ہوجائے تاکہ ملک میں باقی جو مسائل ہیں جیسے آئی ایم ایف کے قرضے ہیں ان پر بات نہ کی جا سکے۔چیئرمین سینیٹ نے فواد چوہدری اور مشاہد اللہ خان کو جرگہ کے لیے بھیج دیااور کہا کہ آج بلوچ جرگہ کام آگیا،شہریار آفریدی اور شبلی فراز فواد چوہدری کو لیکر اور رضا ربانی ، مشاہد اللہ خان کو لیکر صلح کرانے لابی میں لے گئے۔مذاکرات کی کامیابی کے بعد مشاہد اللہ خان اور فواد چوہدری میں صلح ہوگئی جس کے بعد دونوں ایوان میں واپس آگئے ،ان کی آمد پر ممبران نے ڈیسک بجاکر خیرمقدم کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں