12

کٹاس راج کیس، سیمنٹ فیکٹریوں کی رپورٹ پیش

اسلام آباد(فری ہینڈ نیوز)سپریم کورٹ آف پاکستان میں کٹاس راج کیس کی سماعت ہوئی جس کے دوران سیمنٹ فیکٹریوں نے رپورٹ پیش کر دی۔رپورٹ کے مطابق صنعتی استعمال کے لیے زیرزمین پانی کا استعمال بند کر دیا گیا ہے، صرف فیکٹری ملازمین کے استعمال کے لیے پانی نکالا جا رہا ہے۔اس موقع پر سول سوسائٹی کے نمائندے نے کہا کہ سیمنٹ فیکٹری والے جھوٹ بول رہے ہیں،انہوں نے وہاں چشمے خشک کر دئیے ہیں۔ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ سنگ جانی اور باہتر میں قائم سیمنٹ فیکٹریاں بھی زیر زمین پانی استعمال کر رہی ہیں۔عدالت عظمیٰ نے ڈپٹی کمشنر کو سیمنٹ فیکٹریوں کی رپورٹ کی تصدیق کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے پنجاب حکومت کو سیمنٹ فیکٹری مالکان کو ہراساں کرنے سے منع کر دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں