19

وزیر اعلی سندھ کی بہبود آبادی پر ٹاسک فورس بنانے کی منظوری

کراچی(فری ہینڈ نیوز)وزیر اعلی سند ھ سید مراد علی شاہ نے مشترکہ مفادات کونسل کے فیصلے کے بعد صوبے میں اعلیٰ سطح پر سندھ پاپولیشن ٹاسک فورس بنانے کی منظوری دے دی۔ٹاسک فورس کے 9 قواعد و ضوابط بنائے گئے ہیں، جس میں آبادی کے حوالے سے منصوبہ بندی، تعلیم، نوجوانوں کے امور، صحت، عوامی بہبود، کھاد، خوراک اور زراعت کی ترقی کے حوالے سے اہداف شامل ہیں۔ترجمان وزیراعلیٰ سندھ کے مطابق ٹاسک فورس کے سربراہ وزیر اعلیٰ سندھ ہوں گے جبکہ صوبائی وزراء ، چیف سیکرٹری سندھ، یو ایس ایڈ، زیبسٹ، یو این ایف پی اے، آغا خان یونیورسٹی اور دیگر اداروں کے 21 ممبران شامل ہونگے۔آبادی بہبود کی منصوبہ بندی کے حوالے سے تین مرحلوں میں بنائی گئی ٹاسک فورس ترقی کے اہداف کا تعین کرے گی، جس میں قلیل مدتی 2020، درمیانی مدت 2023 اور 2030 تک کا طویل مدتی پروگرام شامل ہے۔ترجمان کے مطابق اہداف کی عملدرآمدر کا وقتاً فوقتاً ٹاسک فورس جائزہ لے گی اور نجی شعبے کی بھی رہنمائی کرتی رہے گی۔آبادی کے معاشی ترقی کے اوپر اثرات اور پالیسی فیصلے پر بھی وقتاً فوقتاً غور کرتی رہے گی تاکہ خاندانی منصوبہ بندی پر عملدرآمد ہو سکے۔ٹاسک فورس عالمی ڈونر، شراکت دار اور سول سوسائٹی کو بھی اپنے فیصلوں میں شامل رکھے گی تاکہ خاندانی منصوبہ بندی اور زچہ و بچہ کی صحت کو یقینی بنایا جاسکے۔ترجمان کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے ٹاسک فورس کو قانو ن سازی اور ریگولیشن کے طریقہ کار کو صحیح طور پر متعارف کرا سکے گی۔خاندانی منصوبہ بندی کے حوالے سے عوام میں آگاہی، ماں اور بچے کی صحت کے حوالیسے رہنمائی بھی کرے گی۔وزیراعلیٰ سندھ کی رہنمائی میں ٹاسک فورس ہر 4 ماہ بعد (ایک سال میں3 مرتبہ) اجلاس منعقد کرے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں