13

مدینے کی ریاست کا تصور پیش کرنے پر عمران خان کو سلام‘مولانا طارق جمیل

لاہور(فری ہینڈ نیوز)معروف عالم دین مولانا طارق جمیل نے مدینے کی ریاست کا تصور پیش کرنے پر عمران خان کو سلام پیش کیا اور کہا کہ حکمرانوں کی نیت کے اچھے یا برا ہونے سے ملک پر اثر پڑتاہے۔مولانا طارق جمیل نے سپریم کورٹ میں’بڑھتی آباد ی پرفوری توجہ‘ کے عنوان سے منعقدہ سمپوزیم سے خطاب کیا۔اس موقع پر سیکریٹری ہیلتھ ریگولیشنز زاہد سعید،امریکی ماہر ڈاکٹر جان بونگاٹرز نے بھی اظہار خیال کیا جبکہ گلوکار شہزاد رائے نے تھیم سانگ پیش کیا۔معروف عالم دین نے آبادی میں اضافے کی بڑی وجہ معاشرتی دباؤ، غربت اور کم علمی کو قرار دیا۔ان کا کہنا تھا کہ جب بنیادیں بہتر ہوں گی تو ذیلی مسائل خود بخود حل ہوجائیں گے،فلاحی ریاست کے بنیادی اجزاء4 عدل، امن اور بہتر معیشت ہے،ایک دن کا عدل 60 سال کی بندگی سے بہتر ہے۔مولانا طارق جمیل نے یہ بھی کہا کہ نظام عدل کی مضبوطی سے ہی امن کی ریاست بنتی ہے،انسان کی تخلیق دنیا کا سب سے عظیم پروجیکٹ ہے، پاکستان میں خاندانی منصوبہ بندی کے لیے موثر پلاننگ کی ضرورت ہے۔زاہد سعید نے کہا کہ آبادی بڑھنے کاتناسب یہی رہاتو 30سال بعد آبادی دوگنا ہوجائیگی۔ڈاکٹر جان بونگاٹرز نے کہا کہ پاکستان میں خاندانی منصوبہ بندی کے لیے موثر پلاننگ کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں