16

سوئس حکومت نے بینک اکاؤنٹس سے متعلق معاہدے کی توثیق کردی‘شہزاد اکبر

اسلام آباد(فری ہینڈ نیوز)وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ سوئٹزرلینڈ نے پاکستان کے ساتھ معاہدے کی توثیق کردی، اب تمام سوئس بینکوں کی تفصیلات مل سکیں گی۔شہزاد اکبر نے وزیراعظم کے معاون خصوصی افتخار درانی کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب میں کہا کہ سوئس بینکوں سے اہم معلومات 4 سے 6 ہفتوں میں مل جائیں گی۔ان کا کہنا تھا کہ 5 سے 6 سال اس معاہدے پر دستخط نہ کرکے ضائع کئے گئے،معاہدے کے تحت،پرانی معلومات حاصل کرنے کی کوشش کریں گے۔شہزاد اکبر نے کہا کہ جرمن اتھارٹی سے بھی معلومات کے لیے رابطہ کرلیا جبکہ برٹس ورجن آئی لینڈ کے ساتھ بھی معاہدے پر دستخط کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ نواز شریف کے خلاف اختیارات کے غلط استعمال کا نیا کیس نیب کو بھجوادیا،سابق وزیراعظم کیخلاف آمدن سے زائد اثاثوں کاکیس بھی بن رہا ہے،بیگم کلثوم نواز کے نام لندن میں فلیٹ ظاہرنہیں تھا، اس پربھی نیب ان کیخلاف آمدن سے زائد اثاثوں کا کیس بنا رہا ہے۔شہزاد اکبر نے کہا کہ وی وی آئی پی ایئر کرافٹ کے غلط استعمال سمیت دیگر مقدمات کی شواہد پر مبنی دستاویزات نیب کو بھجوادی ہیں۔افتخار درانی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کے 100 روزہ پلان کے تحت غربت کے خاتمے کا ادارہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے، جس کا سربراہ ڈاکٹر اشفاق حسن کو لگایا جائے گا،یہ ادارہ وفاق اور صوبوں کی سطح پر رابطے کرے گا اور پالیسی بنائے گا،مختلف وزارتوں کے حکام اس ادارے کے ممبر ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت نے’ لاء اینڈ جسٹس کمیشن‘ میں ایکس آفیشو ممبر کے ساتھ 4 ممبران تعینات کرنے کا فیصلہ کیا،اس کمیشن میں ہر صوبے سے ایک ممبر تعینات کیا جائے گا۔افتخار درانی نے یہ بھی کہاکہ چیف جسٹس نے 4 ممبران تعینات کرنے کی سفارش کردی،خیبرپختونخوا سے جسٹس شاکر اللہ جان، پنجاب سے جسٹس سائر علی،سندھ سے جسٹس خلجی عارف اور بلوچستان سے ایڈووکیٹ ایاز ظہور کو ممبر تعینات کرنے کی سفارش کی گئی۔ان کا کہنا تھا کہ ممبران کو 3سال کیلئے تعینات کرنیکی سفارش کی گئی،وزارت قانون نے سمری منظوری کیلئے وفاقی کابینہ کو بھجوادی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں