43

مسئلہ کشمیر آج تک اسلئے حل نہیں ہوسکا کیونکہ اس کی قیادت مخلص نہیں ہے‘طارق جاوید چوہدری

گجرات (راجہ وقاص علی )ممتاز و سینئر قانون دان سابقہ وائس چیئرمین پنجاب بار کونسل و سابقہ صدر گجرات بار طارق جاوید چوہدری ایڈووکیٹ نے گجرات بار کے زیر اہتمام کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وزیر اعظم آزاد جموں وکشمیر کو گجرات حدود کے بارڈ پر روکا گیا جوکہ ایک تشویش ناک معاملہ ہے جس کو معمول کے مطابق نہیں لینا چاہئے ،کیونکہ یہ میرے خیال ایک شازش ہے اور ایک ایسی سازش ہے جس میں ایک نشانہ سے دو شکار ہوئے ہیں کہ وزیر اعظم آزاد جموں و کشمیر راجہ فاروق حیدر جوکہ گجرات بار کشمیر کانفرنس میں تشریف لا رہئے تھے اُن کا تعلق کیونکہ مسلم لیگ ن سے ہے لیکن یہ ایک شرم ناک حرکت ہے کہ ہم اِن کو کس مقصد کیلئے یہاں بالا رہے تھے پوری دنیا میں اس ایام میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے سمینار ،ریلیاں نکالی جاتی ہے اور اگر وکلاء جو اس میں حصہ دار بن رہے ہیں اُس کو تقویت پہنچا کر یہ سب کچھ کر رہئے ہیں یہ نہ تو سیاسی پروگرام تھا اس میں اس طرح کا کردارادا کرنا اس کی جیتنی بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے انہوں نے کہاکہ میرا وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے یہ مطالبہ ہوگا کہ اس کی انکوائری کروائی کہ کیا یہ جو سیکیورٹی تھریڈ ہے حقیقت پر مبنی ہے یا یہ ایک شازیش ہے ،وزیر اعظم عمران خان اُن کا کہنا ہے کہ اِ ن کی جو انتظامیہ ہے وہ آزاد ہے وہ کسی سیاسی دباؤمیں نہیں آئی گی نہ آنے دیں گے ،تو یہاں اس موقع پر اس کا بھی فیصلہ ہو جائے گا کہ اُن کا یہ کہنا حقیقت پر مبنی ہے یا پھریہ سیاسی نعرہ ہے س۔انہوں نے گجرات بار کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مسئلہ کشمیر آج تک اس لئے حل نہیں ہوسکا کیونکہ اس کی قیادت مخلص نہیں ہے ۔اگر اس طرح کی شازشیں ہوتی رہی تو جیتنی قربانیاں دی جارہی ہیں اور جیتی جدوجہدکشمیریوں کی آزادی کیلئے ہم کر رہئے ہیں اُ سکا نتیجہ کچھ نہیں نکلے گا ۔وکلاء کی تحریکیں ہمیشہ سے کامیاب ہوتی آئی ہیں اور انشاء اللہ تعالیٰ کشمیریوں کی آزادی کیلئے بھی وکلاء کی یہ تحریک کامیاب ہوگی کیونکہ اس کی قیادت مخلص ہے۔ انہوں نے مزید کہاکہ جب تک ہم اپنے اندر سے اند غرداروں اور ان شازیشوں کو ختم نہیں کر لیتے تب تک کشمیر کی آزادی ممکن نہیں ہر جگہ غردار اور شازشیں موجود ہیں ان کے خلاف بھی آواز بلند کرنی چاہئے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں