44

بھارتی افواج نہتے بے گناہ کشمیری ،بچوں ،خواتین اور بزرگوں پر پیلٹ گن سے اندھا کیا جارہا ہے‘شمشاد اللہ ملہی

گجرات (راجہ وقاص علی )وزیر اعظم آزاد جموں کشمیر راجہ فاروق حیدر کو گجرات بار کشمیر کانفرنس آمد کے حوالے سے سکیورٹی فراہم نہ کرنا انتہائی افسوس ناک عمل ہے جو کہ حکومت پاکستان اور پنجاب حکومت کا کشمیریوں کے حق میں مخلص پن نہ ہونے کا منہ بولتا ثبوت وزیر اعظم آزاد جموں وکشمیر کو آزادی کشمیر کانفرنس سے روکنا ہے ان خیالات کا اظہارصدر گجرات بار چوہدری شمشاد اللہ ملہی ایڈووکیٹ نے کیا انہوں نے گجرات بار کے زیر اہتمام آزادی کشمیر کانفرنس میں وکلاء و دیگر کمیونٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ گجرات سے40کلومیٹرفاصلہ پر انسانیت پر بھارتی مظالم کی جس طرح تذلیل کی جا رہی ہے انتہائی افسوس نا ک ہے جس طرح مودی سرکار کی جانب سے بھارتی افواج نہتے بے گناہ کشمیری ،بچوں ،خواتین اور بزرگوں پر بیلٹ گن سے اندھا کیا جارہا ہے اُس کی مثال دنیا میں کہی نہیں ملتی ،یوم یکجہتی کشمیر پر ہم کشمیری عوام کی آزادی کے حوالے سے بھر پور سپورٹ کرتے ہیں ،جب بھی انسانی حقوق کی پامالی پر آواز بلند کرنا مقصود ہوگا گجرات بار انشاء اللہ تعالیٰ صف اول میں ہوگی اور گجرات بار تمام ریاستی اداروں اور تمام مومنٹس کے لیڈران کی کال پر انسانی حقوق کیلئے بھر پور آواز بلند کرتی رہی گے۔انہوں نے کہاکہ گجرات بار کا وجود اس کی روایات اور اُس کے اقتدار سے جڑا ہوا ہے ،گجرات بار نے ہمیشہ رول آف لاء کیلئے آواز بلند کی ۔لا ء منسٹر آزاد جموں و کشمیر حاجی جاوید اخترنے گجرات بار کا نام ہمیشہ روشن کرنے کیلئے اس کے مفادات کیلئے جو فرض ادا کیا ہے اُسے گجرات بار ہمیشہ یاد رکھے گی ۔جب سے پاکستان وجود میں آیا ہے آئین پے ڈاکہ ڈالا گیا چاہئے وہ صدر ایوب کا دور ہو،اُس کے کالے قوانین ہوں،چاہئے ضاء الحق کا سخت گیر مارشل لاء ہوں اور پرویز مشرف کا مارشل لاء کے دور میں جس طرح آئین کو معطل کیا گیا ،پاکستان بھر کی جوڈیشری کو گرفتار کرکے جیل میں ڈالا گیا تاکہ تمام تر آوازیں جو قانون اور آئین کی بالا دستی کیلئے بلند ہوتی ہیں اُن کو ختم کیا جاسکے لیکن وہ ہمیشہ اپنے ناپاک مقاصد میں نا کام رہے انہوں نے کہاکہ گجرات بار نے عدلیہ اور آئین کی بحالی کیلئے لازوال جدوجہد کا آغاز کیا جس نے پاکستان کے اندر تمام نظریات اور تصورایات کو نیا جنم دیا ۔2004میں بھی ایکس جوڈیشری اور معاویات عدالت کا قتل اور انسانی حقوق کو پامال کیا گیا اُ س وقت بھی گجرات بار نے سب سے پہلے آواز بلند کی ،گجرات بار نے آئین ،عدلیہ بحالی اور انسانی حقوق کے تحفظ کیلئے لازوال قربانیاں دی ،اب وقت آگیا ہے کہ سوسائٹی اور گردونواح میں انسانی حقوق کو جس طرح پامال کیا جارہاہے اُس پے آواز بلند کرنا ہم سب کا فرض ہے ،اُس فرض اور اِس سنت کو پورا کرتے ہوئے آج ہم نے یہاں پے کشمیرکانفرنس کا انعقاد کیا جس میں کابینہ گجرات بار اور ممبران بار اور دیگر کا بے حد مشکور ہو کہ جنہوں نے کشمیر کانفرنس میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے بھر پور شرکت کی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں