49

جنسی ہراسانی کیخلاف آواز اٹھانے پر بنگلادیش میں لڑکی قتل

بنگلا دیش(فری ہینڈ نیوز)بنگلادیش میں جنسی ہراسانی کے خلاف آواز اٹھانا 19 سالہ لڑکی کی موت کی وجہ بن گیا۔بنگلا دیش میں 19 برس کی لڑکی نصرت جہاں کو مٹی کا تیل چھڑک کر آگ لگادی گئی۔نصرت جہاں نے 27 مارچ کو پولیس کو شکایت درج کرائی تھی۔شکایات میں کہا گیا تھا کہ مدرسے کے پرنسپل نے اسے جنسی طور پر ہراساں کرنے کی کوشش کی۔پولیس نے پرنسپل کو گرفتار کیا تو نصرت جہاں کو دھمکیاں ملنا شروع ہوگئیں،6 اپریل کو اسے مدرسے میں مٹی کا تیل چھڑک کر آگ لگادی گئی۔نصرت جہاں کو اسپتال پہنچایا گیا،لیکن اس سے پہلے ہی وہ جاں بحق ہوگئی۔بنگلادیش کی وزیراعظم شیخ حسینہ واجد نے ذمہ داری کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں