25

سری لنکا، کرفیو کے باوجود مسلمان شخص کا قتل

سری لنکا(فری ہینڈ نیوز)سری لنکا میں حالیہ مسلم کش فسادات شروع ہونے کے بعد لگنے والے کرفیو کے باوجود نامعلوم افراد نے ایک مسلمان شخص کو قتل کر دیا ۔ سری لنکن حکام کے مطابق مذکورہ 45سالہ مسلمان شخص پر تیز دھار آلے سے حملہ کیا گیا، جس سے وہ جاں بحق ہو گیا ۔ واضح رہے کہ ایسٹر دھماکوں کے بعد سری لنکا کے مختلف علاقوں میں صورت حال کشیدہ ہے جس کے پیش نظر مختلف علاقوں میں کرفیو نافذ کیا گیا تھا ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سری لنکا حکومت کی جانب سے سوشل میڈیا پر پابندی لگادی گئی ہے ۔ غیرملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق سری لنکا کے بعض اضلاع میں مسلم کش فسادات پھوٹ پڑے ہیں ، جن کے دوران مسلمانوں کی املاک کو نذر آتش کیا گیا اور مساجد کو بھی نقصان پہنچایا گیا ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق فسادات کے دوران مسلمان شہریوں نے پولیس اسٹیشنز میں پناہ لے کر اپنی جانیں بچائی ہیں ۔ پولیس نے فسادات میں ملوث درجنوں افراد کو حراست میں لے لیا ہے تاہم زیر حراست افراد کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں