35

گرفتاری یا جیل سے ڈرایا نہیں جاسکتا، بلاول بھٹو

اسلام آباد(فری ہینڈ نیوز)چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ بی بی شہید کے بچے کو گرفتاری اور جیل سے نہیں ڈرایا جاسکتا ۔ آصف زرداری عدالتوں کا سامنا کرنے کو تیار ہیں ۔ گرفتاری فیئر ٹرائل کے آئینی حق کے خلاف ہے،صرف اپوزیشن کا احتساب ہونا سیاسی انتقام ہے ۔ آصف زرداری کی گرفتاری کے بعد اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ اپنی نالائقی اورنا اہلی کو چھپانے کے لیے ہی آصف زرداری کو گرفتار کیا گیا،یہ سمجھتے ہیں کہ ہم پردبائو ڈال کریہ ہماری زبان بندکردیں گے،حکومت اپنی نالائقی اورنا اہلی چھپانے کے لیے پکڑدھکڑ کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بزدل حکومت ہے جو عوام ،میڈیا اور عدلیہ سے بھی ڈرتی ہے، نوکریوں کا وعدہ کیا تھا آج یہ لوگوں سے نوکریاں چھین رہے ہیں ، یہ معاشی سطح پر ناکام ہورہے ہیں ،خان کا ہر وعدہ جھوٹا اور دھوکا نکلا ۔ بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ صوبوں اورعوام کے حقوق پر حملے ہورہے ہیں ہم یہ برداشت نہیں کرسکتے، حکومت سلیکٹڈ عدلیہ، سلیکٹڈ احتساب اور سلیکٹڈمیڈیا چاہتی ہے،کٹھ پتلی ہونے کی وجہ سے آج انہوں نے آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر نہیں نکالے ۔ چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ پیپلز پارٹی ججوں کے خلاف ریفرنس کی مذمت کرتی ہے،اس طرح کے اقدامات کی پیپلزپارٹی مخالفت کرتی رہے گی، اس حکومت نےایم این ایزکو بھی گرفتار کرلیا، انتخابی مہم اورجلوس نہیں نکالنے دے رہی ۔ ہم جوڈیشل ریفارمز کے لیے کوششیں جاری رکھیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیرستان کے 2 ایم این ایز کے پروڈکشن آرڈرز جلد جاری کیے جائیں تاکہ ہم ان کا موقف سن سکیں ،ہر فورم پر عوام کے انسانی حقوق کا تحفظ کریں گے ۔ بلاول بھٹو زرداری نے مزید کہا کہ آئی ایم ایف کی خاطرپوری حکومت آوَٹ سورس کی گئی ہے، اپنی معاشی دہشت گردی چھپانا اورعوام کو گمراہ رکھنا ان کی حکمت عملی ہے،عوام کےمعاشی حقوق پرجو حملے یہ حکومت کررہی ہے کسی نے نہیں کیے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام دشمن بجٹ آیا تو آپ کو بتادیں گے عوامی احتجاج کیا ہوتا ہے ، عوام دوست بجٹ لےکر آئیں پھر مجھے بھی خوشی سےگرفتارکرلیں ۔آپ عوام دوست بجٹ لےکر آئیں میں اس بجٹ کوسپورٹ کروں گا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں