23

کپتان حارث سہیل کو پہلے نہ کھلانے کے جواز دینے لگے

لاہور(فری ہینڈ نیوز)سرفراز احمد گزشتہ میچز میں حارث سہیل کو نہ کھلانے کے جواز دینے لگے۔ پی سی بی کی جانب سے جاری کردہ کالم میں سرفراز احمد نے تحریرکیاکہ گذشتہ میچ میں حارث سہیل کی اننگز دونوں ٹیموں میں فرق ثابت ہوئی، وہ ایک مشکل چیلنج کے طور پر ورلڈ کپ کا صرف دوسرا میچ کھیل رہے تھے، انھوں نے ایک قیمتی اننگز کھیلی اور آخری 15 اوورز میں جوز بٹلر کا انداز اختیار کیا، میچ کھیلنے کیلیے بے تاب بیٹسمین نے آغاز میں ہی مثبت انداز اختیار کیا، ان کی بابر اعظم کے ساتھ شراکت نے حریف کو دباؤ میں لانے کا موقع فراہم کیا۔ کپتان نے کہا کہ حارث سہیل کی کارکردگی سے یہ سوال ابھرتا ہے کہ ہم نے پہلے میچ کے بعد ان کو کیوں ڈراپ کیا؟ دراصل ہم ایک مخصوص کمبی نیشن کے ساتھ کھیلنا چاہتے تھے، اس لیے ان کی پلیئنگ الیون میں جگہ نہیں بنی،حارث میں بہت ٹیلنٹ موجود اور وہ مستقبل کیلیے ایک اہم کھلاڑی ہیں، بدقسمتی سے ان کا کیریئر فٹنس مسائل سے دوچار رہا، امید ہے کہ یہ اننگزکیریئر کو پروان چڑھانے میں معاون ثابت ہوگی۔ سرفراز نے کہا کہ ہم ایک ٹیم کے طور پر ہارتے اور جیتتے ہیں، یہی پاکستان ٹیم کی پہچان ہے اور رہے گی، جنوبی افریقہ کے خلاف فتح بھی پوری ٹیم کی کوشش کا نتیجہ ہے، ہمیں اس کی سخت ضرورت تھی، ہمارے لیے گذشتہ ہفتہ بہت مشکل رہا، ہم بھارت سے میچ بری طرح ہارے تھے جس پر تنقید ہوئی جو زیادہ تر جائز تھی۔ کپتان نے کہا کہ ہم نے اس کو مثبت لیا اور مل بیٹھ کر فیصلہ کیا کہ جو ہوا اسے بھلا کر آگے بڑھیں گے، غلطیاں نہیں دہرائیں گے،ہمیں انگلینڈ کیخلاف سری لنکا کی اپ سیٹ کامیابی نے بھی حوصلہ دیا کہ سیمی فائنل تک رسائی کے راستے کھلے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ٹیم مثبت ذہن کے ساتھ لارڈز پہنچی اور سرخرو ہوئی، اب نیوزی لینڈ کیخلاف بھی ایسی ہی کارکردگی کا مظاہرہ کرنا ہوگا، بیٹنگ میں پرفارم کرنا اور بولنگ میں ابتدائی وکٹیں لینا یہی کامیابی کی ضمانت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں