21

بھارتی سیاست داں کو کشمیریوں کے حق میں بولنا مہنگا پڑگیا

انڈیا(فری ہینڈ نیوز) بھارت میں کشمیریوں کی حمایت میں بولنا بھی غداری جیسا سنگین جرم بن گیا، مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے متعلق بیان پر بھارتی سیاسی و سماجی کارکن شہلا رشید کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کر لیا گیا۔ شہلا رشید کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بنیادی انسانی حقوق کی معطلی اور پابندیوں کے خلاف بات کرنے کےجرم میں ان کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی، غیر سنجیدہ اور سیاسی بنیادوں پر درج کی گئی ایف آئی آر انہیں خاموش کروانے کی بھونڈی کوشش ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ آرٹیکل 370 کی منسوخی کو عدالت میں چیلنج کرنے والی آئینی پٹیشن کا حصہ ہیں اور ان کی پیٹیشن آرٹیکل 370 کی دوبارہ بحالی کے لیے پرزور دلائل لیے ہوئے ہے۔ اپنے بیان کے آخر میں انہوں نے تمام افراد سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے حقوق کی بحالی کی جنگ کرنے والے کشمیری عوام سے اظہارِ یک جہتی کے لیے کھڑے ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں