102

اوور سیز کو ان کے ووٹ حق کا دیا جائے ،الیاس چوہان

لگ بھگ ایک کروڑ اور سیز ہیں جو جن کی سوچ اور حق رائے سے محروم رکھا جارہا ہے۔
سیلاب ہو یا زلزلہ ۔ڈیم ہو یا قرض اتارو سکیم پارٹی فنڈ ہو یا دھرنا فنڈ ۔ زر مبادلہ ہو یا ۔ خالی خزانہ بھرنا سکول سکیم ہو یا مذہبی فنڈ ۔چیرٹی فنڈ ہو یا ہسپتال کا چندہ ریگستان میں پانی کی سکیم ہو ۔یا دیگر علاقوں میں ترقیاتی فنڈ ۔ سب سے پہلے سب سےآگے اور سیز اور سب کی توقعات اور سیز پر اور سب کی توقعات پر پورا بھی اترتا ہے تو اور سیز ہی ہے۔ مولانا کا فنڈ ہو رمل یونیورسٹی فنڈ ۔ کینسر ہسپتال فنڈ ہو ۔ یا کشکول توڑو فنڈ ۔ ہر تعاون سے لے کر زرمبادلہ میں بنیادی کردار ہمیشہ اور سیز نے ادا کیا اور فیملی سے لے کر ہر ادارے پارٹی کی نظر اور سیز پر کی محنت اور خون پسینہ سے کمائی ہوئ دولت اور روپیہ پیسہ پر ہوتی ہے سب کی امیدیں اور سیز پر اور سیز سب کی امیدوں پر دل و جان سے پورا اترتا ہے ۔
مگر بدقسمتی دیکھیں کہ اور سیز کا نہ ووٹ دینا ان کو بھاتا ہے اور نہ اور سیز کو ووٹ لینے کا حق اور سیز پر اپنوں سے لے سیاسیوں تک سب نے آپ حق جتایا اور لیا مگر اور سیز کو ہر حق سے محروم رکھا گیا
ہمیں اپنے حقوق سے محروم رکھنے والوں کے خلاف بیک آواز اکٹھے ہونے کی ضرورت ہے کیا آپ اس پر اتفاق کرتے ہیں اگر اتفاق کرتے ہیں تو آو اپنے حقوق کے لئے اپنی آواز خو د بنیں اور اپنے حق لئے اپنی جد وجہد جاری کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں